WORLD PHYSICAL THERAPY DAY IS CELEBRATED IN BAQAI MEDICAL UNIVERSITY

کراچی:۔ ۸؍ستمبر( پ۔ر)بقائی میڈیکل یونیورسٹی میں عالمی یوم فزیکل تھراپی کا انعقاد کیا گیا۔ اس موقع پرڈپارٹمنٹ آف ہیلتھ اینڈ اسپورٹس سائنس جامعہ کراچی ایسوسی ایٹ پروفیسر ڈاکٹرعبد الباسط انصاری نے ’’Add Life to goal‘‘ کے موضوع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ فزیکل تھراپی انسانی زندگی کو معیاری بناتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مادّی ترقی کی بدولت جہاں انسانی زندگی میں سہولتیں میسر آتی ہیں۔ وہیں معیار زندگی بلند ہونے سے ہم مستعدی اور مشقت چھوڑ کر سستی اور کاہلی کا شکار بن رہے ہیں جو کسی بھی طرح مقاصد زندگی سے ہم آہنگ نہیں ہے، یقیناًانسانی ترقی سے مسائل میں کمی آئی ہے اور ہم شاہراہ ترقی کی طرح گامزن ہیں مگر ہمارے لئے ضعیفی کی عمر میں زندگی گزارنا دشوار ہوگیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ضعیف العمر لوگ ہماری توجہ کے منتظر ہیں۔ ہمیں مال بنانے کے بجائے اپنے ہاتھوں کی جادوگری سے دکھ درد میں مبتلا لوگوں کا مسیحا بننا ہے یہی ہمارا اور فزیو تھراپی کا کمال ہے۔ انہوں نے کہا کہ عام طورپر۷۰ برس کا انسان عموماً چلتے پھرتے گرپڑتا ہے۔ ہمیں عمر رسیدہ لوگوں کو باخبر کرنا ہے کہ روز مرہ زندگی کس طرح گزاری جائے۔ماضی کے مقابلے میں جدید دور میں فزیکل تھراپی کے اہم مقاصد ہیں ہم انسانوں کو معیاری زندگی کا تحفہ دینا چاہتے ہیں۔ اب شعبۂ طب فزیکل تھراپسٹ کے بغیر مکمل نہیں ہے۔ ہمیں لوگوں کے شعور کو اجاگر کرنا ہے کہ ہیلتھ لائف اسٹائل یا زندگی کیا ہے۔ اس طرح ہم ۱۰ ملین افراد کو بیماریوں سے محفوظ کرسکتے ہیں یقیناًجامعہ بقائی اس ضمن میں موثر کردار ادا کررہی ہے اور ہمیں یقین ہے کہ مستقبل میں بلکہ یہ آج کا پیغام ہے کہ لوگوں کی زندگی میں بہتری لائی جائے۔ اس موقع پر ڈاکٹر مظاہر ضیا اسسٹنٹ پروفیسر ڈپارٹمنٹ آف ہیلتھ فزیکل ایجوکیشن اینڈ اسپورٹس سائنسز جامعہ کراچی نے اپنے خصوصی موضوع فزیکل فٹنس پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ غیر شعوری طورپر مشقت سے گریزاں لوگوں میں سستی اور کاہلی کا عنصر اب معمولی بن چکا ہے ۔مختلف پیشوں سے وابستہ افزاد کے کام کی نوعیت کچھ بھی ہوسکتی ہے لیکن زندگی میں فعالیت کو ترجیح دینا صحت مندی کی علامت ہے۔ انہوں نے طلبہ سے کہا کہ فزیو تھراپسٹ کے فعال کردار ادا کرنے سے ایک قوم ترقی یافتہ بنتی ہے۔ ہمیں لوگوں میں یہ شعور اجاگر کرنا ہے کہ فعال زندگی ملکی خوشخالی کا ذریعہ بنتی ہے اور فزیکل فٹنیس سے ہم کئی بیماریوں سے محفوظ رہ سکتے ہیں۔ ہمارا مقصد انسانی زندگی کار آمد بنانا ہے۔ یہ ایک الگ بات ہے کہ ہر انسان کی زندگی کا اپنا ایک لائحہ عمل ہوتا ہے۔ ایک صحت مند انسان ہی زندگی کی حقیقتوں کو جانتا اور پہچاتا ہے ۔ ہمیں کم وقت میں بہتر نتائج کا حصول چاہئے ۔ طلبا و طالبات کو بھی اپنی فزیکل فٹنس پر بھرپور توجہ کی ضرورت ہے۔ اس موقع پر مہمان خصوصی شعبہ زچہ و بچہ فاطمہ ہسپتال بقائی میڈیکل یونیورسٹی ماہر امراض زچہ و بچہ پروفیسر عذرا سلطانہ نے کہاکہ مقررین نے آج یوم عالمی فزیکل تھراپی کے موقع پر جن موضوعات پر اظہار خیال کیا ہے اس سے طلبہ میں یہ شعور اجاگر ہو گا کہ فزیکل تھراپسٹ کی فعالیت سے بھی مریض شفایاب ہوتے ہیں ۔فعال زندگی گزارنے کے لئے ہمیں شعوری تربیت کو متواتر جاری رکھنا چاہئے۔ اس موقع پرانہوں نے مقررین کو یادگار شیلڈ پیش کی جب کہ ڈاکٹر مہوش شمیم سربراہ بقائی انسٹی ٹیوٹ فزیکل اینڈ ریہبلیٹیشن سائنسز نے مقررین اور شرکا ورکشاپ کا شکریہ ادا کیا۔ اس موقع پر تمام طلبا و طالبات کی ہیلتھ فٹنس کا معائنہ کیا گیا۔ میزبانی کے فرائض فائنل ایر کے طالب علم طاہر اکرم نے انجام دیے۔