Baqai Medical University First Community Based & Community Oriented
Medical University

Condolence meeting on the tragic death of Professor Dr. MoinUddin (Director Baqai Institute of Hematology)

کراچی:۹ مئی(پ ر) خون کی بیماریوں کے عالمی تسلیم شدہ ماہر اور عظیم انسان دوست پروفیسر ڈاکٹر معین الدین ڈائریکٹر بقائی انسٹیٹیوٹ آف ہیماٹولوجی کے ناگہانی سانحہ ارتحال پر بقائی میڈیکل یونیورسٹی کی ٹیچنگ فیکلٹی اور غیر تدریسی عملے کا تعزیتی اجلاس بقائی میڈیکل یونیورسٹی میں منعقد ہوا۔ اس موقع پر چانسلر پروفیسر ڈاکٹر فریدالدین بقائی اور وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر زاہدہ بقائی نے گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا آج بقائی میڈیکل یونیورسٹی اپنے ایک اہم ترین ستون سے محروم ہوگئی ہے۔ انہوں نے خلوص اور محنت کے ساتھ بقائی فاؤنڈیشن کے فروغ صحت اور ارتقائے تعلیم کے تصور کو آگے بڑھایا ان کی اسلامی جمہوریہ مالدیپ میں ہیموفیلیا کے تدارک کی مساعی خصوصاً وہاں کے ماہرین طب اور نرسوں کی تعلیم و تربیت کی کوششوں کو ہمیشہ یادرکھا جائے گا۔وہ اپنی حیات کے آخری دن تک تھیلیسیمیا کے تدارک میں علمی اور عملی طورپر مصروف رہے۔پرووائس چانسلر میجر جنرل(ر) محمد اسلم نے اپنے تعلق تجربہ کی بنیاد پر انہیں دیانت ۔امانت کے پیکر کہا۔ بہترین معالج اور منفرد شخصیت تھے بناوٹ سے پاک تھے۔ پروفیسرسید فضل حسین نے بحیثیت ساتھی اور معالج کے حوالے سے اپنے تجربات اور تعلق کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان کی زندگی ہر اعتبار سے نمونہ عمل تھی۔ان کے ڈرائیورممتاز نے برسوں کے تعلق کو لفظوں سے زیادہ اپنے آنسوں سے اظہار کیا۔ پرنسپل بقائی میڈیکل کالج پروفیسر افتخار احمد صدیقی نے کہا کہ ان کی رحلت ہم سب کا اور خصوصاً میرا ذاتی تقصان ہے۔ بقائی میڈیکل کالج کے ابتدائی طلبہ کی حیثیت سے مجھے ان کی شاگردی پر ہمیشہ فخر رہا ہے۔ اس موقعہ پر میں اپنے شاگردوں سے کہوں گا کہ اگر وہ کسی کو رول ماڈل بنانا چاہتے ہیں تو ان کے روبرو پروفیسر معین الدین کی شخصیت کا عکس موجود ہے ہمیں ان کا بدل ملنا مشکل ہے علم سے لگن اور اپنے کام سے دلچسپی اور لوگوں کو اپنے ہنر سے فیض پہنچنانے کے باعث انہیں جو دعائیں ملتی رہی ہیں وہ ان کی نجات کا ذریعہ بنیں گی۔ دعا کے بعد پروفیسر افتخار نے قرارداد پیش کی کہ بقائی انسٹیٹیوٹ آف ہیماٹولو جی کا نام معین انسٹیٹیوٹ آف ہیماٹولوجی رکھا جائے جسے اکثریت رائے سے منظور کرلیا گیا۔